200

” گولڈن بلڈٔ ” دنیا کا نایاب ترین انسانی خون کا گروپ

آر ایچ نل دنیا کا نایاب ترین انسانی خون کا گروپ ہے جسے ” گولڈن بلڈ ” بھی کہا جا تا ہے ، گزشتہ 50 برس میں یہ صرف 43 افراد میں ہی دریافت ہوا ہے- سائنسی تحقیق اور خون کی منتقلی کے بعد ہی اس قسم کے خون کی تصدیق ہوئی ہے تاہم اس نایاب خون کے مالک خواتین و حضرات کی زندگی بھی کسی خطرے سے کم نہیں ہوتی کیونکہ اس کا عطیہ کنندہ ملنا بہت مشکل ہوتا ہے- ایک جانب تو یہ مٹھی بھر لوگوں میں خون کا گروہ ہے تو دوسری جانب سائنی تحقیق کے لیے اہم ہے کیونکہ اس کا مطالعہ خون کے پیچیدہ نظام کو سمجھنے میں مدد دیتا ہے

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں