206

لاہور میں ہیپا ٹائٹس اے اور ای کی وبا، ہر دسواں شخص متاثر

لاہورشہر میں آلودہ پانی اور مضر صحت اشیا خوردنوش کی فروخت کے باعث ہیپاٹائٹس اے اور ای کی وبا پھوٹنے سے ہر دسواں شخص متاثر ہو گیا، ہسپتالوں میں جگر کی سوزش کے باعث روزانہ کی بنیاد پ یرقان کے مریض رپورٹ ہو رہوے ہیں- حاملہ خواتین بچے اور بوڑھے زیادہ متاثر ہیں- سکولوں ، کالجوں اور یونیورسٹی کے طلبا کی بڑی تعداد بھی یرقان میں مبتلا ہو کر رہ گئی ہے
ڈاکٹروں کے مطابق اتنی بڑی تعد میں یرقان کے مریض پہلے کبھی نہیں آئے- لاہور کے مختلف ٹیچنگ ہسپتالوں کے شعبہ میڈیسن سمیت شہر بھر میں کام کرنے والے فیجلی فزیشن ڈاکٹروں کے مطابق گزشتہ تین چار ماہ سے لاہور شہر اور اس کے نواحی علاقوں میں یرقان نے وبائی شکل اختیار کر لی ہےاور روزانہ ہر ہسپتال میں 10 سے 15 پرائیویٹ کلینکس پر 15 سے 20 مریض رپورٹ ہو رہے ہیں – جن میں زیادہ تر تعداد بچوں ، بوڑھوں اور خواتین سمیت سکولوں کالجوں اور یونیورسٹی کے طلبا و طالبات کی ہے جو آلودہ پانی استعمال کرنے سمیت کھانے پینے کی اشیا میں احتیاط نہیں برتتے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں