Urdu Daily News PK 102

سپریم کورٹ میں E-Court سسٹم شروع، وکلا اپنے شہر سے دلائل دے سکیں گے

سپریم کورٹ میں ای کورٹ سسٹم متعارف کروادیا گیا- ای کورٹ سسٹم سے سائلین کو کم خرچ میں جلد انصاف میسر ہوگا- ای جوڈیشل سسٹم کے تحت پہلے مقدمے کی سماعت پیر 27 مئی کو ہوگی- سپریم کورٹ کے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق چیف جسٹس مقدمے کی سماعت ای جوڈیشل سسٹم سے کریں گے-
یہ بھی پڑھیں: پاکستان کے 12 بڑے شہروں کےگٹر کے پانی میں پولیو وائرس کی تصدیق
ای جوڈیشل سسٹم پر کراچی کے کچھ مقدمات کی سماعت ہوگی- چیف جسٹس سپریم کورٹ اسلام آباد میں موجود ہوں گے- وکلا کراچی رجسٹری میں کمرہ عدالت سے دالائل دیں گے- بینچ چیف جسٹس کی سربراہی میں 3 ججز پر مشتمل ہوگا- ای کورٹ کی سہولت سے مقدمات کے التوا کی حوصلہ شکنی ہوگی- وکلا اپنا کیس کسی تاخیر کے بغیر پیش کرسکیں گے وکلا کو اپنے ہی شہر میں دلائل دینے کی سہولت میسر ہوگی-
سائلین کو جلد انصاف اور پیسے کی بھی بچت ہوگی- بیک لاک ختم کرنے میں معاون ثابت ہوگا – اعلامیہ کے مطابق ای کورٹ سسٹم زیر التوا مقدمات کا بوجھ ختم کرنے میں معاون ثابت ہوگا-بیان میں کہا گیا ہے عدالتی تاریخ میں پہلی مرتبہ انفارمیشن کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کی مدد سے ایک کورٹ کا آغاز کیا جا رہا ہے – اعامیے کے مطابق ای کورٹ سسٹم ملک بھر میں سپریم کورٹ کی برانچ رجسٹریز میں شروع کیا جائے گا- ای کورٹ نظام سے مراد عدالتی نظآم میں ٹیکنالوجی کا ایسا استعمال ہے جو وقت اور وسائل کے ضیاع کو روکنے میں مدد دے سکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں