157

بھارت: امتحانات میں فیل ہونے پر 19 طالب علموں کی خودکشی

نئی دہلی( این این آئی) بھارت میں امتحانات میں فیل ہونیوالے 19 طالب علموں نے خودکشی لرلی- تلنگانہ حکومت نے ہزاروں طلبا کی غلطی سے فیل کیے جانے کے الزامات کے بعد پرچے دوبارہ چیک کرنے کا حکم دیدیا- خودکشی کرنیوالے ایک بچے نجندرا کے والد ویوک آنند نے کہا کہ ان کا بیٹا اچھا طالب علم تھا اور متحانات کے نتائج نے اس کا دل توڑ دیا اور اس نے گھر میں ہی خود کو بھانسی لگالی-
ہمیں ہقین نہیں آرہا کہ وہ اپنے پسندیدہ مضمون ریاضی میں فیل ہو گیا
ناظم آباد سے تعلق رکھنے والے وینیلا نے 2 پرچوں میں فیل ہونے کے بعد کیڑے مار دوا کھا کر جان دیدی- والدین اور طالب علموں کے گروپس کی جانب سے بڑے پیمانے پر احتجاج کے بعد ریاستی حکومت نے 3 لاکھ سے زائد طالب علموں کے پرچوں کو دوبارہ سے چیک کرنے کا حکم دیا ہے- تلنگانہ پیرنٹس ایسی ایشن کے صدر این نریانا نے بتایا کہ ان امتحانات کے نتائج مرتب کرنیوالی فرم گلوب ایرینا ٹیکناوجیز نے ابتدا میں تسلیم کیا تھا کہ اس نظام میں تھوڑی خرابی ہے لیکن بعد میں انہوں نے کہا کہ اس ٹھیک کر دیا گیا ہے- امتحانات میں فیل طالب علموں کی خودکشیوں کے معاملے پر احتجاج میں اس وقت تیزی آئی جب ایک طالب علم کو تیلگو زبان کے پرچے میں صفر نمبر ملے لیکن ری چیکنگ میں اس کے نمبر 99 ہوگئے- ریاست کے وزیر تعلیم جگدیش ریڈی نے کہا اگر غلطی ہوئی ہے تو ہم زمہ داروں کو سزا دیں گے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں